Aliwalay.com

News & Media Website

Aliwalay.com Network
SINCE 2007


Our Projects:
1. http://qna.aliwalay.com/
[you can ask your fiqhi issue to our Islamic scholars hujjat ul islam moulana ali nasir mehdavi]

2. http://majalis.aliwalay.com/archive/
[biggest collection of ulmah majalis and lectures on different topics]

3. http://www.aliwalay.com/aliwalay/
[ biggest collection of nohay , manqbat , naats etc]

4. http://books.aliwalay.com/
Islamic archive related books

5.https://vimeo.com/aliwalay/videos
biggest collection of video lectures

1:32
**ولادت امام رضا علیہ السلام ** *١٥٢ ہجری کے ماہ ذیقعد کی گیارہویں شب تھی جب مدینہ رسول الله نور امامت سے جگمگا اٹھا تھا ، جناب امام موسیٰ کاظم باب الحوائج علیہ السلام کے گھر میں آفتاب ہدایت آیا، یا آسمان امامت پر آٹھواں مہتاب نمودار ہوا.* *جناب نجمہ علیہ السلام کی آغوش کو جونہی سلطنت امامت کے آٹھویں تاجدار نے زینت بخشی ، عبادت نے آگے بڑھ کر ان پیکر نور کی پیشانی چومی تو صداقت نے زبان نورانی کے بوسے لیے ، ادھر کلمہ شہادت کی صدا فرش سے عرش پر گئی ادھر عرش سے فرش پر درود و سلام کی آوازیں آنے لگیں ،* *تسلیم و رضا نے سلامی دی ، صبر آداب بجا لایا ، تقوی نے دامن چوما ، عرفان نے دست بوسی کی ،* *معرفت نے آگے بڑھ کر کہا امام العارفین آیا ،* *قرآن نے پکارا امام مبین آ گیا ،* *اسلام پکارا رسول الله کا آٹھواں جانشین آ گیا ،* *آسمان پر فرشتوں نے صدا بلند کی کہ سیدہ کے گھر میں ہم نام امیر المومنین آ گیا ،* اور ، *زمین سے تعلق رکھنے والے محبان اہل بیت نے یک زبان ہو کر کہا کہ :* *گھر میں موسیٰ کے کلیم سخن آرا چمکا* *آٹھواں برج امامت کا ستارہ چمکا* *آپ تمام احباب کو امام رضا، صابر، زكىّ، وفىّ، ولىّ، رضىّ، ضامن ، غريب ، نورالہدى ، سراج اللّہ ، غيظ المحدّثين ، غياث المستغيثين کی ولادت باسعادت بہت بہت مبارک ہو ..* *‎علی والے نیٹ ورک کی پوری ٹیم*
6 months ago
3:51
*باسمہ تعالی* *تخریب جنت البقیع کا سیاسی پس منظر* *takhrib-e- jannatul baqi ka seyasi pas manzar* 8شوال1344 ھ.ق بنام دین ، انسانیت کو ذبح کرنے والا سیاسی و گمراہ گروہ وہابی کے پیرو کار کی جسارت و وحشیانہ حملہ کا نتیجہ انہدام جنت البقیع ہے یہ عالم اسلام کے ناگوار ترین اور اندوہ ناک واقعات میں سے ایک ہے ۔ اس دن امام زمانہ عج کا قلب مبارک اور تمام محبین اہل بیت عصمت و طہارت (صلوات الله عليهم) کے قلوب مجروح ہوئے یہ دن روز عزا اور رنج و غم ہے لہذا تمام مومنین کی خدمت میں تعزیت پیش کرتا ہوں *جنت البقیع صرف ایک قبرستان کا نام نہیں ہے بلکہ تاریخ اسلام کا عظیم خزانہ ہے آسمان ولایت و امامت کے چار درخشاں ستاروں کی قبریں یہاں ہیں رسول اکرم ( صلى الله عليه و آله) کے چچا، زن وفرزند، اصحاب، تابعین اور دوسری شخصیات کی قبریں یہاں ہیں* *بنابر این 8 شوال صرف جنت البقیع پرحملہ و ہجوم نہیں تھا بلکہ تاریخ اسلام پر ہلا بولنا اور حملہ و ہجوم تھا جنت البقیع کی تخریب نہیں تھی بلکہ اسلام محمدی کی تخریب تھی* اسلامی نہیں بلکہ سیاسی گروہ وہابی اپنے جاہلانہ،احمقانہ' گمراہ کن اور باطل عقائد کی وجہ سے اولیاءالہی کی قبروں اور حرم کو خراب کرتے ہیں یہ تو سبھی کو معلوم ہے لیکن ایک مہم مطلب جس کی طرف ہماری توجہ کم رہتی ہے وہ یہ ہے کہ 1750 میں ابن سعود کے ذریعے شخصی و خاندانی حکومت سعودیہ کی تشکیل ہوئی اس حکومت کی بنیاد دو چیزوں پر رکھی گئی ، شمشیر اور ترویج وہابیت شمشیر والا کام ابن سعود کو سونپا گیا اور اشاعت وہابیت محمد بن عبد الوہاب کے ذمے کی گئی اور 1948 میں حکومت اسرائیل کی بنیاد رکھی گئی ۔ محکم شواہد و ثبوت کے مطابق ان دونوں حکومتوں کی تاسیس میں سلطنت برطانیہ کا اہم رول ہے اور حکومت اسرائیل کی تشکیل میں سلطنت برطانیہ اور سعودیہ دونوں نے بڑی محنت کی ہے *سعودیہ کی تاریخ تقریبا 267 سال ہے بہت قدیمی نہیں ہے اور اسرائیل کی تاریخ ماضی قریب ہے یعنی تقریبا 69 سال ۔* دونوں حکومتوں کا گزشتہ تاریک ہے ، ان کی اپنی ثقافت، تہذیب اور کلچر ہے ہی نہیں *مقدس نشانیاں، بزرگوں کی یاد گاریں اور آثار قدیمہ تہذیب و کلچر کی نشاندہی کرتی ہیں ان سب چیزوں سے ثقافت، تہذیب' کلچر اور قوم کی بقا ہے* ان دونوں حکومتوں کا اپنا ماضی ہوتا تو ثقافت، تہذیب، کلچر اور یادگاریں ہوتیں اسی لئے تمام آثار خصوصا اسلامی آثار و جنت البقیع سے ان کو دشمنی و نفرت ہے ، جہاں جاتے ہیں پہلا کام تخریب کاری ہے ، ان کی ناجائز اولاد داعش بھی آخری دم تک یہی کام کر رہے ہیں *مسجدیں اور عزاخا نے جلائے کتنے* *وحشیوں نے کیا انسان کی تہذیب پہ وار*
7 months ago
6:47
امام علی ج کے آخری روزے کی افطاری آج کی رات امام علی ج افطار کرنے کے لیے اپنی بیٹی کے گھر تشریف لائے. حضرت ام کلثوم ج فرماتی ہیں جب انیس رمضان کی شب ہوئی میں بابا کی خدمت میں افطار کے لیے ایک برتن لے گئی جس میں دوجو کی روٹیاں تھوڑا سا نمک اور دودھ کا پیالہ تھا.جب آپ نماز سے فارغ ہوئے تو دستر خوان کی طرف متوجہ ہوئے سر کو ہلایا زور زور سے گریہ شروع کردیا.فرمانے لگے- کیا کوئی بیٹی اپنے باپ کے ساتھ ایسا کرسکتی ہے جو تم نے کیا ہے!! میں نے عرض کیا بابا جان میں نے کیا کیا؟ فرمایا: آپ نے ایک دستر خوان پہ دوکھانے لاکے رکھ دیئے کیا تم چاہتی ہو تیرا باپ بارگاہ رب العزت میں دیر تک کھڑا رہے؟ میں تو فقط اپنے بھائی رسول اللہ ج کی پیروی کرتا ہوں.جنہوں نے کبھی ایک دستر خوان پہ دو کھانے تناول نہیں فرمائے تھے. بیٹی ایک چیز اٹھا لو میں نے دودھ کا پیالہ اٹھا لیا جو کی ایک روٹی نمک کے ساتھ تناول فرمائی.پھر شکر پروردگار ادا کرنے کے بعد دوبارہ مصلہ عبادت پر تشریف لے گئے اور رکوع و سجدے میں مصروف ہوگئے,کبھی کبھی صحن میں تشریف لاتے آسمان کی طرف نظر ڈال کے فرماتے تھے اللہ کی قسم نہ ہی میں نے جھوٹ بولا ہے اور نہ مجھ سے جھوٹ بولا گیا ہے یہ وہی رات ہے جس کا مجھ سے وعدہ کیا گیا ہے.پھر مصلے پہ تشریف لائے اور فرماتے اے اللہ میری موت میں چھ میرے لیے برکت قرار دے اور کثرت سے اناالله وانااليه رجعون اور حضور اکرم ج پر درود بھیجتے اور کثرت سے استغفار کرتے رہے میں نے پوچھا:بابا! آج رات آپ کی یہ کیفیت کیوں ہے؟ تھوڑی دیر قیام فرمایا پھر مصلے پہ عبادت میں مصروف ہوئے بیٹی ام کلثوم مجھے اذان صبح سے پہلے بتادینا کہ اذان کا وقت قریب ہونے لگا ہے. پھر تیار ہوکے مسجد جانے لگے گھر میں موجود مرغابیوں نے شور کرنا شروع کردیا تو میں نے امام حسن ج سے کہا: حسن ج بھیا ان مرغابیوں نے اس سے قبل کبھی اس طرح کی چیخ و پکار نہیں کی تھی تو امیرالمومنین ج نے فرمایا: کچھ دیر بعد نوحے کی آواز بلند ہونگی. امام مسجد میں تشریف لے گئے,گلدستہ اذان پہ جاکر اذان کہی کوفہ کے سب لوگوں کی آپ کی اذان کی آواز سنی. پھر آپ گلدستہ اذان سے نیچے اُترے,پھر آپ نے مسجد میں سوئے ہوئے افراد کوجگانا شروع کردیا اور ہر سوئے ہوئے فرد سے کہتے کہ خدا تجھ پررحم کرے اُٹھو نماز پڑھو.آپ لوگوں کو جگاتے ہوئے ابن ملجم کے پاس آئے.وہ منہ کے بل لیٹا ہواتھا.اُس نے اپنی تلوار چھپائی ہوئی تھی. امام ج نے اس سےفرمایا:اے شخص ! نیند سے بیدار ہو جا,اس طرح سے سونے کو خدا ناپسند کرتا ہے.یہ شیطان کے سونے کا انداز ہے اور یہ اہل دوزخ کے سونے کا انداز ہے. پھر آپ نے اس لعین سے فرمایا: تو جو ارادہ لے کرآیا ہے یہ اتنا خوفناک ہے کہ اس سے آسمان پھٹ سکتے ہیں اور زمین ریزہ ریزہ ہوسکتی ہے.اگر میں چاہوں تو میں تجھے یہ بتاسکتا ہوں کہ تو نے کپڑوں میں کیا چھپا رکھا ہے.یہ کہہ کر آپ ع چلے گئے اور محراب میں تشریف لائے اور نماز شروع کی.آپ نے نماز میں طویل رکوع وسجود کیے. ادھر وہ لعین تاریخ انسانیت کے بدترین جرم کے اقدام کی نیت سے اُٹھا اور چلتے ہوئے اس ستون کے قریب آیا جہاں آپ نماز میں مصروف تھے.آپ نے پہلی رکعت پڑھی اور پہلا سجدہ ادا کیا.پھر سر کو اُٹھایا.وہ لعین آگے بڑھا اور آپ کے سر اطہر پر تلوار کا وار کیا. جبرئیل نے زمین و آسمان کے درمیان آواز دی جسے ہر سننے والے نے سنا.اللہ کی قسم آج ہدایت کے ارکان تباہ ہوگئے,آسمان کے ستارے اور تقویٰ کی نشانیاں ختم ہوگئیں,حضرت پیغمبر گرامی ص کے چچا زاد وصی حضرت علی ج قتل کردیئے گئے جسے بد بخت ترین شخص نے قتل کردیا. (الانوار العلویہ,ص,٣٨٠,٣٨٨,مصائب معصومین ع,ص,٤١,٤٢,علی ج آمد سے شہادت تک,ص,٤٦٢,٤٦٣) علی والے نیٹ ورک WhatsApp messenger +923313484627
8 months ago